Friday, Apr 25th

Last update09:31:59 AM

You are here: Press Releases Local PRs Rajab: Month of the Fall of the Khilafah
  • PDF

Rajab: Month of the Fall of the Khilafah

Hizb ut Tahrir’s country wide campaign and addresses to public gatherings

In the month of Rajab Hizb ut Tahrir Wilayah Pakistan conducted an aggressive nationwide campaign. This is the month in which Khilafah was abolished. An open letter to General Kayani, who is America’s guardian in Pakistan, was distributed in huge numbers nationwide. Further more bayyans were delivered at public places. Speakers in their speeches highlighted the role played by Kayani and his small group of supporters in the political and military leadership, taking sides against the Muslim Ummah as per the wishes of their American masters. They said Americans have been granted permission to build the biggest American embassy in world. American diplomats openly travel in vehicles with fabricated number plates, carrying illegal weapons and when they are caught red handedly they get VIP treatment and are released without registration of any case. These diplomats have been allowed to meet officials of government offices, leaders of political and religious parties so that they can win agents amongst them. Thousands of visa were granted to American CIA and Black Water agents and they conducted bomb blasts and target killings so that a war between Pakistan armed forces and the people could be ignited. Muslims of Pakistan who work for the destruction of capitalist system and the establishment of Khilafah are being abducted, tortured and threatened to be killed. All of these acts are being conducted by Kayani and his treacherous colleagues on the orders of their master America in order to weaken Pakistan, to make it a client state of India and to stop the re-emergence of the Khilafah. Speakers said even after the attacks on Abbotabad and Salala, killing of thousands of innocent civilians in drone attacks and Americas campaign to malign Pakistan all over the world, Kayani and his gang do not want to exit this American war, rather they are very enthusiastic about opening the NATO supply line. Speakers urged the Ummah to reject democracy, dictatorship and the capitalist system, as well as those parties who call people on these slogans. Speakers asked the people to raise the slogan of الشعب يريد الخلافة الجديد “The people want the new Khilafah.” just like the people of Syria are doing and giving a historic sacrifice for this cause. They said the people of Pakistan must join the peaceful political struggle of Hizb ut Tahrir in order to achieve this goal. They warned Kayani and his gang that their oppression can not stop Hizb ut Tahrir and even if you get the help of the entire world, the establishment of Khilafah will take place with the will of Allah. In these gatherings flags of coming Khilafah state were distributed in large numbers among the Ummah. Also four resolutions were passed during these gatherings which are as follows:

Resolution 1: Reject all political interference by the Western colonialist Kuffar.

Islam forbids any pact that grants authority to non-Muslims over Muslims. Allah سبحانه وتعالى said:

وَلَنْ يَجْعَلَ اللَّهُ لِلْكَافِرِينَ عَلَى الْمُؤْمِنِينَ سَبِيلا

“And Allah will by no means give the unbelievers a way against the believers.” [Surah Al-Nisa 4:141]

Accordingly, the Muslims of Pakistan not only reject the expansion of the American embassy, they call for the closure of all hostile colonialist embassies and the expulsion of their Ambassador.

Resolution 2: Reject all military and intelligence alliance with the belligerent Western forces.

Islam forbids any form of alliance with the hostile American forces. Allah سبحانه وتعالى said:

يَا أَيُّهَا الَّذِينَ آمَنُوا لاَ تَتَّخِذُوا عَدُوِّي وَعَدُوَّكُمْ أَوْلِيَاءَ تُلْقُونَ إِلَيْهِمْ بِالْمَوَدَّةِ وَقَدْ كَفَرُوا بِمَا جَاءَكُمْ مِنْ الْحَقِّ

"O you who believe! Choose not My enemies who are your enemies as Allies showing them affection even when they disbelieve in that truth that has come to you" [Surah Mumtahina 60:1]

Accordingly, the Muslims of Pakistan call for the immediate expulsion of all American military and intelligence officials from Pakistan.

Resolution 3: Support the uprising for Khilafah

The Muslims of Pakistan are encouraged by the uprising in the Arab world and there is much talk of an uprising in Pakistan. Islam has made it Fard upon the Muslims that there must be a bayah to the Khaleefah. RasulAllah سلم و عليه الله صلى established the importance of the bayah by saying:

مَنْ مَاتَ وَلَيْسَ فِي عُنُقِهِ بَيْعَةٌ مَاتَ مِيتَةً جَاهِلِيَّةً

“Whose so ever dies with out the bay’ah on his neck dies the death of Jahilliyah.” (Muslim)

Accordingly, the Muslims of Pakistan call for full support for the work of Hizb ut Tahrir in its work throughout the Muslim world to establish Khilafah.

Resolution 4: Call upon the Pakistan Armed Forces to give Nussrah for the establishment of the Khilafah.

The Muslim Armed Forces must remember the reward which Muhammad s.a.w announced for those who helped and provide Nussrah to establish Islam. The Ansar asked RasulAllah سلم و عليه الله صلى:

فَمَا لَنَا بِذَلِكَ يَا رَسُولَ اللّهِ إنْ نَحْنُ وَفّيْنَا (بِذَلِكَ) قَالَ الْجَنّةُ. قَالُوا: اُبْسُطْ يَدَك. فَبَسَطَ يَدَهُ فَبَايَعُوه

"Ya Rasool Allah (saw), what is our reward if we honour our word?” The Prophet (saw) said: “Jannah”. They responded: “Hold your hand”, so the Prophet (saw) held his hand and they made the pledge.

Accordingly, the Muslims of Pakistan call Pakistan’s Armed Forces to grant the Nussrah to Hizb ut Tahrir for the immediate restoration of the Khilafah state, as the platform for the re-unification of the entire Muslims world and a just new leadership for all of humankind

 

Shahzad Shaikh

Deputy to the Spokesman of Hizb ut-Tahrir in Pakistan

URDU INP DOWNLOAD

URDU PDF DOWNLOAD

 

بسم الله الرحمن الرحيم

پیر، 28، رجب، 1433 ھ 18/06/2012 نمبر:PR12034

یوم ِسقوطِ خلافت: حزب التحریر کی ملک گیر مہم اور عوامی اجتماعات سے خطاب

حزب التحریر ولایہ پاکستان نے رجب کے مہینے میں ملک بھر میں ایک زبردست مہم چلائی۔ یہ وہ مہینہ ہے جب خلافت کا خاتمہ کیا گیا تھا۔ ملک بھر میں بڑی تعداد میں جنرل کیانی کے نام کھلا خط تقسیم کیا گیا جو کہ پاکستان میں امریکی مفادات کا محافظ ہے۔ اس کے علاوہ ملک بھر میں عوامی مقامات پر امت سے خطاب کیا گیا۔ مقررین نے اپنے خطاب میں کیانی اور سیاسی و فوجی قیادت میں موجود اس کے چند غدار ساتھیوں کی امت مسلمہ کے خلاف امریکی جنگ میں امت کے ساتھ غداری پر روشنی ڈالی۔ انھوں نے کہا کہ دنیا میں امریکہ کے سب سے بڑے سفارت خانے کی تعمیر کی اجازت دینا، کھلے عام امریکی سفارت کاروں کا جعلی نمبر پلیٹوں والی گاڑیوں میں اسلحے سمیت پورے ملک میں دندناتے پھرنا اور گرفتاری کے باوجود انھیں بغیر مقدمہ قائم کیے چھوڑ دینا، ان سفارت کاروں کو ملک کے ہر ادارے کے ملازمین، سیاسی و مذہبی قائدین سے ملاقاتوں کی اجازت دینا تا کہ وہ ان میں اپنے لیے ایجنٹ پیدا کر سکیں، ہزاروں کی تعداد میں امریکی سی۔آئی۔اے اور بلیک واٹر کے ایجنٹوں کو ویزے جاری کرنا تاکہ وہ ملک بھر میں بم دھماکوں اور ٹارگٹ کلنگ کی وارداتوں کے ذریعے فتنے کی آگ کو بھڑکا سکیں، ملک سے کفریہ سرمایہ دارانہ نظام کے خاتمے اور خلافت کے قیام کی پرامن جدوجہد کرنے والے حزب التحریر کے قائدین اور ممبران کو اغوا کرنا، انھیں شدید تشدد کا نشانہ بنانا اور انھیں قتل کی دھمکیاں دینا، یہ سب کچھ کیانی اور اس کے غدار ساتھی اپنے آقا امریکہ کے حکم پر پاکستان کو کمزور کرنے اور اسے بھارت کی ذیلی ریاست بنانے اوراسلام کے نفاذ یعنی خلافت کے قیام کو روکنے کے لیے کر رہے ہیں۔ انھوں نے کہا حد تو یہ ہے کہ ایبٹ آباد و سلالہ واقعات، ڈرون حملوں میں ہزاروں بے گناہ مسلمانوں کی شہادت اور دنیا بھر میں پاکستان کو ذلیل و رسوا کرنے کی امریکی مہم کے باوجود کیانی اور اس کا چھوٹا سا ٹولہ فتنے کی اس امریکی جنگ سے باہر نکلنے کے لیے تیار نہیں بلکہ نیٹو سپلائی لائن کھولنے کے لیے انتہائی بے قرار ہیں۔ مقررین نے امت سے کہا کہ جس طرح شام کے مسلمان جمہوریت، آمریت اور سرمایہ دارانہ نظام اور اس کی داعی جماعتوں کو مسترد کر کے "الشعب یرید الخلافة الجدید" یعنی "لوگ ایک نئی خلافت چاہتے ہیں" کے نعرے لگاتے لازوال قربانیاں دے رہے ہیں اسی طرح پاکستان کے مسلمان بھی اس منزل کو حاصل کرنے کے لیے حزب التحریر کی پرامن سیاسی جدوجہد کا حصہ بن جائیں۔ انھوں نے کیانی اور اس کے ٹولے کو خبردار کیا کہ ان کے مظالم نہ تو حزب التحریر کو روک سکتے ہیں اور اگر پوری دنیا کی مدد بھی آجائے تو بھی خلافت کا قیام رک نہیں سکتا۔ ان اجتماعات میں بہت جلد آنے والی ریاستِ خلافت کے جھنڈے بڑی تعداد میں عوام میں تقسیم کیے گئے۔ اس کے علاوہ اس مہم کے دوران چار قراردادیں بھی منظور کی گئی جو درج ذیل ہیں:

قرارداد نمبر 1: مغربی کافر استعمار کی سیاسی مداخلت کی ہر صورت کو مسترد کیا جائے۔

اسلام کسی بھی ایسے معاہدے کی ممانعت کرتا ہے جس کے تحت غیر مسلموں کو مسلمانوں کے امور پر بالادستی حاصل ہو۔ اللہ سبحانہ وتعالیٰ نے فرمایا ہے:

وَلَنْ يَجْعَلَ اللَّهُ لِلْكَافِرِينَ عَلَى الْمُؤْمِنِينَ سَبِيلا

اور اللہ کسی صورت کفار کو ایمان والوں پرکوئی اختیار نہیں دیتا۔ (النسائ۔141)

لہذا پاکستان کے مسلمان نہ صرف امریکی سفارت خانے کی توسیع کو مسترد کرتے ہیں بلکہ وہ اس بات کا مطالبہ کرتے ہیں کہ تمام دشمن استعماری ممالک کے سفارت خانوں کو بند کیا جائے اور ان کے سفارت کاروں کو ملک بدر کیا جائے۔

قرارداد نمبر2: پاکستان کے مسلمان دشمن مغربی افواج کے ساتھ فوجی اور انٹیلی جنس معاونت کو مسترد کرتے ہیں۔

اسلام، دشمن امریکی افواج کے ساتھ کسی بھی قسم کے اتحاد کی ممانعت کرتا ہے۔ اللہ سبحانہ و تعالیٰ فرماتے ہیں:

يَا أَيُّهَا الَّذِينَ آمَنُوا لاَ تَتَّخِذُوا عَدُوِّي وَعَدُوَّكُمْ أَوْلِيَاءَ تُلْقُونَ إِلَيْهِمْ بِالْمَوَدَّةِ وَقَدْ كَفَرُوا بِمَا جَاءَكُمْ مِنْ الْحَقِّ

اے لوگو جو ایمان لائے ہو! میرے اور اپنے دشمنوں کو اپنا دوست نہ بناو۔ تم تو دوستی سے ان کی طرف پیغام بھیجتے ہو اور وہ اس حق کے ساتھ جو تمھارے پاس آچکا ہے کفر کرتے ہیں۔ (الممتحنة۔١)

اس لیے پاکستان کے مسلمان یہ مطالبہ کرتے ہیں کہ پاکستان سے امریکی فوجیوں اور جاسوسوں کو ملک بدر کیا جائے۔

قرارداد نمبر3: خلافت کے قیام کی جدوجہد کی حمائت کی جائے۔

پاکستان کے مسلمان عرب ممالک میں شروع ہونے والے انقلاب سے متاثر ہیں اور پاکستان میں بھی اس طرح کے انقلاب کی بات چیت عام ہے۔ اسلام نے مسلمانوں پراس امر کو فرض قرار دیا ہے کہ وہ ایک خلیفہ کی بیعت کریں۔ رسول اللہ ﷺ نے اس بات کی اہمیت کو واضع کرنے کے لیے فرمایا:

مَنْ مَاتَ وَلَيْسَ فِي عُنُقِهِ بَيْعَةٌ مَاتَ مِيتَةً جَاهِلِيَّةً

جوکوئی اس حال میں مرا کہ اس کی گردن میں (خلیفہ کی) بیعت (کا طوق) نہ ہو تو وہ جاہلیت کی موت مرا۔ (مسلم)

اسی لیے پاکستان کے مسلمان دنیا بھر میں خلافت کے قیام کے لیے حزب التحریر کی جدوجہد کی بھر پور حمائت کرتے ہیں۔

قراردادنمبر 4: افواجِ پاکستان سے مطالبہ کیا جاتا ہے کہ وہ خلافت کے قیام کے لیے مدد و نصرت فراہم کریں۔

مسلم افواج اس انعام کو یاد کریں جس کا اعلان رسول اللہ ﷺ نے دین کے قیام کے لیے مدد و نصرة فراہم کرنے والوں کے لیے کیا تھا۔ انصار نے رسول اللہ ﷺ سے پوچھا تھا:

فَمَا لَنَا بِذَلِكَ يَا رَسُولَ اللّهِ إنْ نَحْنُ وَفّيْنَا (بِذَلِكَ) قَالَ الْجَنّةُ. قَالُوا: اُبْسُطْ يَدَك. فَبَسَطَ يَدَهُ فَبَايَعُوه

"یا رسول اللہ ﷺ اگر ہم اپنے عہد کو پورا کریں تو ہمارے لیے کیا انعام ہے؟"۔ نبی ﷺ نے فرمایا "جنت"۔ انصار نے کہا "اپنا ہاتھ بڑھائیں" اور نبی ﷺ نے اپنا ہاتھ بڑھایا اور انھوں نے بیعت دی۔

اس لیے پاکستان کے مسلمان افواجِ پاکستان سے مطالبہ کرتے ہیں کہ وہ حزب التحریر کو نصرة دیں تا کہ خلافت کا فوری قیام ہو جس کے ذریعے پوری دنیا کے مسلمانوں کو ایک ریاست کے تحت متحد کیا جائے اور پوری انسانیت کو ایک نئی قیادت فراہم کی جائے۔

شہزاد شیخ

پاکستان میں حزب التحریر کے ڈپٹی ترجمان

18/06/2012
Monday 28th of Rajab , 1433H
N0: PR12034
Friday, 7th of Jamdi ul-Awwal
Follow us on Twitter